• product
  • بیوٹی ٹپس
  • پکوان
  • خواتین کے مخصوص مسائل
  • ستارے کیا کہتے ہیں؟
  • صحت و تندرستی
  • فیشن
  • گھریلو مسا ئل اور ان کا حل
  • متفرق
  • مردوں کے مسائل
  • ہنستے مسکراتے رہیے
  • گھریلو مسا ئل اور ان کا حل

    چار چیزیں مائکر و ویو میں نہ رکھیے

    a

    :انڈے

    ما ئکرو ویو میں انڈے رکھ کر اُ بالنے کی کو شش نہ کریں ، اس لیے کہ مئکروویو سے نکلنے والی حدت سے انڈے بے حد سخت ہو جاتے ہیں اور کبھی کبھار پھٹ بھی جاتے ہیں۔ اس لیے کہ انڈوں میں پیدا ہونے والی بھاپ ان سے باہر نہیں نکل پاتی تو وہ پھٹ جاتے ہیں۔
    :گوشٹ
    ڈ یپ فریزر سے گوشت کا بڑا ٹکڑا نکال کر مائکرو ویو میں نہ رکھیں اس لیے کہ گو شت کے نرم و ملائم کنارے تو پکنا شروع ہو جائیں گے، جب کہ درمیانی حصہ بد ستور کچا رہے گا۔ بہتر طریقہ یہ کہ گوشت کو فریزر کے بعد اسے تقریباََ ایک گھنٹے کے لیے کسی بر تن میں رکھ دیں تا کہ اس کی ٹھنڈک ختم ہو جائے اس کے بعد اسے پکنے کے لیے مائکروویو رکھیے۔
    :اسٹیل کے بر تن
    اگر آپ نے کافی یا جائے اسٹیل کے مگ میں بنانے کے لیے مائکروویو میں رکھ دی تو وہ نہیں بن پائے گی، اس کے لیے کہ مئکروویو سے نکلنے والی گر می سے اسٹیل کا مگ گرم ہو نا شروع ہو جاے گا۔
    یاد رکھیے کہ اسٹیل یا ایلو مینیم کے بر تن مائکروویو میں کبھی نہ رکھیں۔ اس لیے کہ یہ خراب ہو جاتے ہیں۔
    :پلاسٹک کے بر تن
    پلاسٹک کے بر تن گر می سے پگھل سکتے ہیں۔ دوسرے یہ کہ کم درجہ حرارت پر ان میں مضر اجزا نکل کر کھانے میں شامل ہو جاتے ہیں۔ جب پلاسٹک کے بر تنوں کی کئی اقسام کو چیک کیا گیا تو معلوم ہوا کہ ان میں س 95فیصد میں ایسے کیمیائی مادے شامل تھے ۔ جو صحت کے لیے مضر تھے۔ چنانچہ آپ انھیں مائکروویو میں نہ رکھیں۔ خواتین بچوں کے دودھ کی بو تل گرم کرنے کے لیے مائکروویو میں رکھ دیتی ہیں جو غلط ہے۔ مائکروویو میں جو غذائیں رکھی جاتی ہیں ، ان میں وہ بر قی مقنا طیسی شعاعیں شامل ہو جاتی ہیں، جو ما ئکروویو چلانے پر اس میں سے خارج ہو تی ہیں، اس لیے مائکروویو میں مذکورہ چیزیں رکھنے سے اجتناب کر نا چاہیے۔

    آردر

    b

    c