• product
  • بیوٹی ٹپس
  • پکوان
  • خواتین کے مخصوص مسائل
  • ستارے کیا کہتے ہیں؟
  • صحت و تندرستی
  • فیشن
  • گھریلو مسا ئل اور ان کا حل
  • متفرق
  • مردوں کے مسائل
  • ہنستے مسکراتے رہیے
  • متفرق

    شکر قندی کے فائدے اور نقصانات

    a

    قارئین آپ کو یقیناً اب میرے مضامین کا انتظار رہتا ہے اور میں بھی آپ کے لئے مفید مضامین پر تحریریں لے کر آتا ہوں تا کہ آپ خدا تعالیٰ کی پیدا کی ہوئی نعمتوں کے فوائد جان سکیں۔میرا آج کا مضمون بھی کچھ اسی حوالے سے ہے ۔چلیں شروع کرتے ہیں کہ شکر قندی کے کیا کیا فائدے اور نقصانات ہیں ۔

    شکر قندی کھانے میں لذت سے بھر پور ہے اور کھانے میں آلو جیسی غذایت کی حامل ہے۔یہ ایک جڑ ہے پاکستان اور بھارت میں بہت زیادہ مقدار میں پائی جاتی ہے۔اس کو بچے خاص طور پر پسند کرتے ہیں کیونکہ یہ تھوڑی میٹھی بھی ہوتی ہے اس لئے اس کو انگلش میں سے میٹھا آلو  کہتے ہیں۔ قیمت کے لحاظ سے بھی یہ سستی ہوتی ہے اس لئے ہر ایک کی قوت خرید میں ہونے کی وجہ سے امیر و غریب سب اس کو پسند کرتے ہیں۔

    یہ بہترین اجزاء پر مشتمل ہوتی ہے جس میں شکر،سوڈیم،کیلشیم،،فولاد ،پوٹاشیم،فائبر،وٹامن اے، بی،سی اور ای پائے جاتے ہیں۔ یہ جسم کو طاقت بخشتی ہے۔یہ ریشہ دار غذا ہے اس لئے آنتوں میں رکے فضلات کو خارج کرنے میں مدد کرتی ہے۔

    شکر قندی کو کھانے کے دو طریقے ہیں ایک تو پانی میں ابال کر کھائی جاتی ہے اور دوسرا ریت یا گرم کوئلوں میں دبا کر پکا لی جاتی ہے اور کھائی جاتی ہے۔کوئلوں میں پکنے والی شکر قندی ،ابلی ہوئی شکر قندی سے زیادہ لذید ہوتی ہے۔بعض لوگ شکر قندی کو خشک کر کے آٹا بنا لیتے ہیں اور پھر اس سے مزیدار حلوہ بھی تیا کیا جا سکتا ہے۔
    شکر قندی کے فائدے
    ٭یہ جسم کو فربہ کرتی ہے۔
    ٭مردوں میں جریان کے مرض کے لئے مفید ہے۔
    ٭منی کو گاڑھا کرتی ہے۔
    ٭شکر قندی دماغ کے لئے بھی فائدہ مند ہے۔
    ٭شکر قندی قبض کو دور کرتی ہے۔
    ٭کمزور بینائی والے افراد کے لئے شکر قندی کھانا مفید ہوتا ہے۔
    ٭شکر قندی بالوں اور آپ کی جلد کے لئے فائدہ مند ہے۔
    ٭جن افراد کا بلڈ پریشر کم رہتا ہے ان کے لئے شکر قندی کھانا مفید ہے۔
    ٭خون میں شوگر کی سطح کو نارمل رکھتی ہے۔
    ٭شکر قندی جلد کی رنگت نکھارتی ہے۔
    شکر قندی کے نقصانات:
    ٭موٹے افرد استعمال نہ کریں کیونکہ یہ جسم کو موٹا کرتی ہے۔
    ٭اس کے کھانے سے پیٹ میں اپھارہ ہو تا ہے۔
    ٭کمزور معدے والے لوگ اس کو استعمال نہ کریں کیونکہ یہ قابض ہے۔
    ٭یہ دیر سے ہضم ہوتی ہے اگر شہد ملا کر کھائی جائے تو بہتر رہتا ہے۔
    ٭کم مقدار میں شکر قندی کا استعمال کریں زیادہ کھانا نقصان کا باعث بنتا ہے۔

    آرڈر

    b

    c