• product
  • بیوٹی ٹپس
  • پکوان
  • خواتین کے مخصوص مسائل
  • ستارے کیا کہتے ہیں؟
  • صحت و تندرستی
  • فیشن
  • گھریلو مسا ئل اور ان کا حل
  • متفرق
  • مردوں کے مسائل
  • ہنستے مسکراتے رہیے
  • گھریلو مسا ئل اور ان کا حل

    جوئیں بھی ایک آفت

    a

    جوں کیا ہے
    کھٹمل اور دیگر کیڑوں کی طرح جوں بھی ایک طفیلی کیڑا ہے ۔ کھٹمل فرنیچریاپلنگ، گھر کی دیگر اشیا، خاص طور پر بستر وغیرہ میں موجود ہوتے ہیں، جب کہ جوں کا ٹھکانا سرکے بال ہوتے ہیں۔ یہ زیادہ تر 5سے 13سال کی عمر کے بچوں کے سرمیں موجود ہوتی ہیں،لیکن یہ ضروری نہیں ہے۔ بڑی عمر کی خواتین کے سر میں بھی یہ موجود ہوتی ہیں، خاص طور پر وہ خواتین اس کانشانہ بنتی ہیں، جنھیں اپنے بالوں میں توجہ کے ساتھ کنگھی کرنے تک کی فرصت نہیں ہوتی ۔ مغرب میں ایسی خواتین بھی دیکھی گئی ہیں، جو اپنے سر کی صفائی کے لیے پالتو بندر سے بھی کام لینے سے نہیں چوکتیں۔ واضح رہے کہ بندر فرصت کے اوقات میں ایک دوسرے کے بالوں سے جوئیں چن کرانھیں چٹ کرتے رہتے ہیں۔
    جوئیں سرکی جلد سے چمٹ کر اُس کاخوان پیتی رہتی ہیں، اگرچہ یہ خوان مقدار میں بہت کم ہوتا ہے، یعنی مچھر اور کھٹمل کے مقابلے میں یہ کم خوچ چوستی ہیں، گردن کے پچھلے حصے میں اور کان کے پیچھے یہ زیادہ جمع رہتی ہیں۔
    علامات
    جوں کے خون چوسنے کی وجہہ سے سر میں کھجلی رہتی ہے اور کھال سوج جاتی ہے۔ بار ار کھجانے سے کھال سے خون بھی رسنے لگتا ہے۔
    علاج
    بنیادی طور پر بالوں کا روزانہ صاف کرنا ایک اہم ضرورت ہے۔ ہرماں کا فرض ہے کہ وہ بچوں کے گھر آتے ہیں ان کے سر کا معائنہ کرے اور کنگھی سے اچھی طرح صاف کرے۔ اب جوؤں کو ہلاک کرنے والے شیمپو اور کریمیں وغیرہ بہت عام ہیں ، جن کے درست استعمال سے بال جوؤں سے صاف اور محفوظ رکھے جاسکتے ہیں۔ گیلے بالوں میں کنگھی اچھی طرح کرنے سے جوئیں کنگھی کے ساتھ باہر نکل آتی ہیں، انھیں اسی وقت مار دینا چاہیے۔ جوؤں سے متاثر افراد کے کپڑے اور تکیوں کے غلاف کھولتے پانی میں بھگوکردھودینا چاہیے۔ اسی طرح ہیئر بینڈوغیرہ کاصاف کرنا بھی ضروری ہے۔ بچوں بچیوں کویہ ہدایت بھی کی جائے کہ وہ ایک دوسرے سے سر ملاکر نہ بیٹھیں۔ یہ احتیاط بھی ضروری ہے کہ جوؤں کو ہلاک کرنے کے لیے کسی قسم کی کیڑے مار ادویہ استعمال نہ کی جائیں۔ نیم کا تیل اس کے پسے ہوئے پتوں کا لیپ بھی مئوثر علاج ہے۔

    آردر

    b

    c